Rail Ki Seeti

18 reviews

Price:
Sale priceRs. 1,200.00

Description

کہنے کو تو یہ ریل کی پٹڑی سے جڑی تقسیم کی وہ کہانیاں ہیں، جو خالی ٹکٹ گھروں اور ویران پلیٹ فارموں پر سننے والوں کی منتظر ہیں مگر حقیقت میں یہ ہر اُس دل کی آپ بیتی ہے جو کہیں نہ کہیں بٹ گیا ہے۔ اس انسان کی مانند جس کا جسم آنے والے کل کے تعاقب میں ہے اور روح، گزرے ہوئے کل کے طلسم میں ہے۔ وک داستانوں، اخباری تراشوں، سینہ گزٹوں اور وقائع نویسوں کے علاوہ ان افسانوں کو کہنے والے روزمرہ معمولات میں چلتے پھرتے لوگ بھی شامل ہیں، ریل کی سیٹی اس لئے پڑھئے۔۔۔ کہ یہ سٹیشن ماسٹر کی وہ آخری جھنڈی ہے جس کے بعد سگنلنگ کا سارا نظام بدلا جائے گا۔۔۔ یہ وہ آخری بھاپ کا انجن ہے جس کے بعد الیکٹرک ٹرانسمیشن، سیٹی کی کوک، کو ایسے کھا جائے گی جیسے، ای میل، ڈاک بابو کو۔۔۔

Title: Rail Ki Seeti
Author: Muhammad Hassan Miraj
Subject: Urdu Literature, Travel, Safarnama
ISBN: 9693529499
Year: 2016
Language: Urdu
Number of Pages: 222

You may also like

Recently viewed

Customer Reviews

Based on 18 reviews
94%
(17)
6%
(1)
0%
(0)
0%
(0)
0%
(0)
Z
Zaigham Zahoor Hashmi

السلام علیکم
میں نے تین مہینوں کے دوران سنگ میل پبلیکیشنز سے آٹھ کتابیں منگوائیں لیکن پڑھنے کا ٹائم نہ مل سکا
آج 04 جولائی 2022 بروز پیر محمد حسن معراج کی کتاب "ریل کی سیٹی" کا مطالعہ مکمل کر لیا ہے
مصنف نے ریل کا یہ سفر
راولپنڈی سے وزیر آباد (مین لائین)
وزیر آباد سے نارووال (برانچ لائین)
وزیر آباد سے شاہدرہ باغ (مین لائین)
شاہدرہ باغ سے شیخو پورہ (برانچ لائین)
شیخو پورہ سے شورکوٹ (برانچ لائین)
شیخو پورہ سے سانگلہ ہل (برانچ لائین)
سانگلہ ہل سے جھنگ (برانچ لائین)
سانگلہ ہل سے خانیوال (برانچ لائین)
خانیوال سے رحیم یار خان (مین لائین)
تک سفر کیا اور پنجاب کے 36 اضلاع میں سے 16 اضلاع کی تفصیلاً یا پھر سرسری تاریخ بیان کی ہے
بہت اچھی اور معلوماتی کتاب ہے تاریخ سے دلچسپی رکھنے والوں کو ضرور پڑھنی چاہیے

O
Omer Javed
Good read

A great read.

M
Muhammad Arif
Excellent

It’s so different, interesting & informative

I
Irfan Mehind
Rail ki siti

I am studying this book and know the history of cities which adjacent with railway line very informative book .

M
Mansab Mahtab
ریل کی سیٹی

لاجواب